مرکزی وزیر داخلہ امیت شاہ نے تشدد سے متاثرہ پڑوسی ریاستوں کے وزرائے اعلیٰ سے بات کی

[ad_1]

مرکزی وزیر داخلہ امت شاہ نے تشدد زدہ منی پور پڑوسی ریاستوں کے وزرائے اعلیٰ سے بات کی۔

نئی دہلی: مرکزی وزیر داخلہ امت شاہ نے منی پور میں قبائلیوں اور اکثریتی میتی برادری کے درمیان تشدد کے پھیلنے کے درمیان جمعرات کو منی پور کی پڑوسی ریاستوں کے وزرائے اعلیٰ سے بات کی۔ حکام نے یہ جانکاری دی ہے۔ انہوں نے بتایا کہ مرکز منی پور کی صورتحال پر گہری نظر رکھے ہوئے ہے اور قریبی ریاستوں سے نیم فوجی دستے بھیجے جا رہے ہیں۔

یہ بھی پڑھیں

حکام کے مطابق شاہ نے ناگالینڈ کے وزیر اعلیٰ نیفیو ریو، میزورم کے وزیر اعلی زورامتھنگا اور آسام کے وزیر اعلیٰ ہمانتا بسوا سرما سے فون پر بات کی۔ منی پور کی حکومت نے جمعرات کو منی پور میں قبائلیوں اور اکثریتی میتی کمیونٹی کے درمیان تشدد کے بعد صورتحال کو کنٹرول کرنے کے لیے دیکھتے ہی گولی مارنے کے احکامات جاری کیے ہیں۔

اس کے ساتھ ہی حالات پر قابو پانے کے لیے فوج اور آسام رائفلز کے 55 ‘کالم’ تعینات کیے گئے ہیں۔ تشدد کی وجہ سے 9000 سے زیادہ لوگ بے گھر ہو چکے ہیں۔ بدھ کے روز ناگا اور کوکی قبائلیوں کی طرف سے ‘قبائلی یکجہتی مارچ’ کے انعقاد کے بعد تشدد پھوٹ پڑا، جس نے رات کو مزید سنگین رخ اختیار کر لیا۔

‘آل ٹرائبل اسٹوڈنٹ یونین منی پور’ (اے ٹی ایس یو ایم) کی طرف سے ضلع چورا چند پور کے علاقے توربنگ میں ‘قبائلی یکجہتی مارچ’ کا مطالبہ غیر قبائلی میتی برادری کے لیے شیڈول ٹرائب (ایس ٹی) کا درجہ دینے کے مطالبے کے خلاف کیا گیا، جس کا تناسب 53 فیصد ہے۔ بدھ کو ریاست کی آبادی میں تشدد پھوٹ پڑا تھا۔

یہ بھی پڑھیں:-
منی پور میں تشدد کے بعد فوج کا فلیگ مارچ، 8 اضلاع میں کرفیو، وزیر داخلہ امیت شاہ نے سی ایم سے بات کی
ہجومی تشدد کے بعد منی پور کے چورا چند پور ضلع میں انٹرنیٹ بند، دفعہ 144 نافذ

[ad_2]
Source link

کے بارے میں alrazanetwork

یہ بھی چیک کریں

Gharib Nawaz

غریب نواز پر الزام تراشی: سازش پرانی اور تیاری پوری ہے !!

غریب نواز پر الزام تراشی: سازش پرانی اور تیاری پوری ہے !! غلام مصطفےٰ نعیمی …

Leave a Reply

واٹس ایپ پیغام بھیجیں۔
%d bloggers like this: