منی پور تشدد: حکومت نے دیکھتے ہی گولی مارنے کا حکم جاری کیا۔

[ad_1]

منی پور تشدد: حکومت نے شرپسندوں کو دیکھتے ہی گولی مارنے کا حکم دیا، فوج کی 55 یونٹ بھی تعینات

منی پور میں تشدد اس کے پیش نظر حکومت نے بڑا حکم جاری کیا ہے۔ معلومات کے مطابق پولیس کو شرپسندوں کو دیکھتے ہی گولی مارنے کا حکم دیا گیا ہے۔ اس کے ساتھ ہی قبائلیوں اور اکثریتی میتی برادری کے درمیان بڑے پیمانے پر فسادات کو روکنے کے لیے فوج اور آسام رائفلز کی 55 کمپنیاں تعینات کی گئی ہیں۔

یہ بھی پڑھیں

وزارت دفاع کے ترجمان نے بتایا کہ صورتحال کے پیش نظر فوج کی 14 بٹالین کو اسٹینڈ بائی پر رکھا گیا ہے۔ مرکز، جو منی پور کی صورت حال پر نظر رکھے ہوئے ہے، نے ریپڈ ایکشن فورس (RAF) کی ٹیمیں بھی بھیجی ہیں، جو فسادات سے نمٹنے کے لیے ایک خصوصی فورس ہے، جو شمال مشرقی ریاست کے تشدد سے متاثرہ علاقوں میں تعیناتی کے لیے ہے۔

حساس علاقوں میں آر اے ایف کے اہلکار تعینات
آر اے ایف سی آر پی ایف کی ایک خصوصی شاخ ہے جو امن و امان سے متعلق صورتحال سے نمٹتی ہے۔ وزارت کے ایک سینئر اہلکار نے انکشاف کیا، ’’یہ 500 جوان حساس علاقوں میں تعینات کیے جائیں گے۔‘‘ اس وقت منی پور میں سی آر پی ایف کی کئی کمپنیاں شہر کے آس پاس تعینات ہیں۔ جب کہ آسام رائفلز اور بھارتی فوج سب سے زیادہ تشدد سے متاثرہ علاقوں میں تعینات ہے۔ ایک سینئر اہلکار کا کہنا ہے کہ ’’حالات ٹھیک نہیں ہیں اور اسی لیے گورنر نے دیکھتے ہی گولی مارنے کا حکم دیا ہے۔‘‘

منی پور تشدد: جانئے پورا معاملہ
‘آل ٹرائبل اسٹوڈنٹس یونین منی پور’ (اے ٹی ایس یو ایم) کی طرف سے ضلع چوراچند پور کے علاقے توربنگ میں ‘قبائلی یکجہتی مارچ’ غیر قبائلی میتی کمیونٹی کے لیے شیڈول ٹرائب (ایس ٹی) کا درجہ دینے کے مطالبے کے خلاف بلایا گیا، جو کہ 53 فیصد ہے۔ ریاست کی آبادی پر تشدد کے دوران بدھ کو پھوٹ پڑی۔

یہ مارچ اس وقت منعقد کیا گیا تھا جب منی پور ہائی کورٹ نے گزشتہ ماہ ریاستی حکومت سے کہا تھا کہ وہ میتی کمیونٹی کے ذریعہ ایس ٹی کا درجہ دینے کے مطالبے پر چار ہفتوں کے اندر مرکز کو سفارش بھیجے۔ پولیس کے مطابق، ضلع چورا چند پور کے علاقے توربنگ میں مارچ کے دوران مبینہ طور پر مسلح افراد کے ہجوم نے میتی کمیونٹی کے افراد پر حملہ کیا، جس کے بعد جوابی حملے ہوئے، جس سے ریاست بھر میں تشدد شروع ہوا۔

یہ بھی پڑھیں:-
منی پور میں تشدد کے بعد فوج کا فلیگ مارچ، 8 اضلاع میں کرفیو، وزیر داخلہ امیت شاہ نے سی ایم سے بات کی
ہجومی تشدد کے بعد منی پور کے چورا چند پور ضلع میں انٹرنیٹ بند، دفعہ 144 نافذ

[ad_2]
Source link

کے بارے میں alrazanetwork

یہ بھی چیک کریں

Gharib Nawaz

غریب نواز پر الزام تراشی: سازش پرانی اور تیاری پوری ہے !!

غریب نواز پر الزام تراشی: سازش پرانی اور تیاری پوری ہے !! غلام مصطفےٰ نعیمی …

Leave a Reply

واٹس ایپ پیغام بھیجیں۔